Ahmed Faraz Poetry in Urdu 2 Lines

Total
1
Shares
Best Sad Ahmed Faraz Poetry

Urdupoetries.net is Premium Source of Urdu Poetry & Quotes. It’s in this post that you find Ahmed Faraz Poetry in Urdu with Roman Urdu to express your heart voice in front of your Loved Ones who love to read or hear standard poetry. It’s a good thing that you can read and easily copy the text of the Ahmed Faraz Shayari for free. With a One click, you can share it with your friends and family members, too!

یہ پلیٹ فارم اردو شاعری اور اقوال زریں کا بہترین ذریعہ ہے۔ اس پوسٹ میں آپ کو احمد فراز کی شاعری اردو اور رومن اردو کے ساتھ ملتی ہے ان لوگوں کے لیے جو اپنے پیاروں کے سامنے اپنے دل کی آواز کا اظہار کرنے کے لیے جو معیاری شاعری پڑھنا یا سننا پسند کرتے ہیں۔ یہ اچھی بات ہے کہ آپ احمد فراز شاعری کے متن کو مفت میں پڑھ اور آسانی سے کاپی کر سکتے ہیں۔ ایک کلک کے ساتھ، آپ اسے اپنے دوستوں اور خاندان کے اراکین کے ساتھ بھی شیئر کر سکتے ہیں!

Scroll Down for Reading Ahmed Faraz Poetry

Love Ahmed Faraz Poetry

Dhoondta Phirta Hoon Logon Mein Shabahat Uss Ki
Ke Woh Khowaboon Mein Bhi Lagti Hai Khayalon Jaisi

ڈھونڈتا پھرتا ہوں لوگوں میں شباہت اُس کی
کہ وہ خوابوں میں بھی لگتی ہے خیالوں جیسی


Barson Ke Baad Dekha Ik Shakhs Dilruba Sa
Ab Zehen Mein Nahi Hai Par Naam Tha Bhala Sa.

برسوں کے بعد دیکھا اِک شخص دِلُربا سا
اب ذہن میں نہیں ہے پر نام تھا بھلا سا


Khalqat Ke Awazay Bhi Thay Band is Ke Darwazay Bhi Thay
Phir Bhi is Koochy Se Guzray’ Phir Bhi is Ka Naam Liya Hai

خلقت کے آوازے بھی تھے بند اس کے دروازے بھی تھے
پھر بھی اس کوچے سے گزرے‘ پھر بھی اس کا نام لیا ہے


Sad Ahmed Faraz Poetry

Gham E Duniya Bhi Gham E Yaar Mein Shamil Karlo
Nasha Barhta Hai Sharabain Jo Sharabon Mein Milein

غمِ دنیا بھی غمِ یار میں شامل کرلو
نشہ بڑھتا ہے شرابیں جو شرابوں میں ملیں


Teri Nazron Mein Marey Dard Ki Qeemat Kya Thi
Marey Daman Ne to Ansoo Ko Gohr Jana Tha

تیری نظروں میں مرے درد کی قیمت کیا تھی
مرے دامن نے تو آنسو کو گہر جانا تھا


Tere Hote Hue Ajati Thi Saari Duniya
Aaj Tanha Hon to Koi Nahi Anay Wala

تیرے ہوتے ہوئے آجاتی تھی ساری دنیا
آج تنہا ہوں تو کوئی نہیں آنے والا


Tujhe to Mein Ne Barri Arzoo Se Chaha Tha
Yeh Kya Ke Chod Chala to Bhi Aur Sab Ki Tarah

تجھے تو میں نے بڑی آرزو سے چاہا تھا
یہ کیا کہ چھوڑ چلا تو بھی اور سب کی طرح


Zamane Bhar Ke Dukhoon Ko Laga Lya Dil Se
Is Aasre Pay Ke Ik Ghamgosar Apna Hai

زمانے بھر کے دکھوں کو لگالیا دل سے
اس آسرے پہ کہ اک غمگسار اپنا ہے


Apni Ashafta Mizaji Pay Hansi Aati Hai
Dushmani Sang Se Aur Kanch Ka Paikar Rakhna

اپنی آشفتہ مزاجی پہ ہنسی آتی ہے
دشمنی سنگ سے اور کانچ کا پیکر رکھنا


Aur Hon Ge Ke Jo Aaina Sift Jeetay Hain
Mein to Mar Jaon Agar Koi Muqabil Nah Raha

اور ہوں گے کہ جو آئینہ صفت جیتے ہیں
میں تو مرجاؤں اگر کوئی مقابل نہ رہے


Deep Ahmed Faraz Poetry

Tujhe Taraash Ke Mein Sakht Mnfal Hon Ke Log
Tujhe Sanam’ Ko Samajhne Lage Khuda’ Mujh Ko

تجھے تراش کے میں سخت منفعل ہوں کہ لوگ
تجھے صنم‘ تو سمجھنے لگے خدا‘ مجھ کو


Doubtey Doubtey Kashti Ko Uchala Day Dun
Mein Nahi Koi to Saahil Pay Utar Jaye Ga

ڈوبتے ڈوبتے کشتی کو اچھالا دے دوں
میں نہیں کوئی تو ساحل پہ اتر جائے گا


Zikar Uska Hi Sahi’ Bazm Mein Baithe Ho Faraz
Dard Kaisa Hi Uthay Hath Nah Dil Par Rakhna

ذکر اُس کا ہی سہی‘ بزم میں بیٹھے ہو فراز
درد کیسا ہی اُٹھے ہاتھ نہ دل پر رکھنا


Zindagi Hum Tere Dhagoon Se Rahay Sharminda
Aur Tu Hai Ki Sada Aaina Khane Mangy

زندگی ہم تیرے داغوں سے رہے شرمندہ
اور تُو ہے کہ سدا آئینہ خانے مانگے

2 comments
Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *